ا

khwab nama Khwabon Ke Darmiyan Farq ki Marfat

khwab nama Khwabon Ke Darmiyan Farq ki Marfat

khwab nama Khwabon Ke Darmiyan Farq ki Marfat

khwab nama Khwabon Ke Darmiyan Farq ki Marfat

khwabon k darmiyan farq ki pehchan

HAZRAT KARMANI RAHMAT U LLAH ALEH ne farmaya he k musalmanona khwab kafron k khwab se ziyada sacha hota he aur dana ka khwab nadan ke khwab se aur saleh aadmi ka khwab fasiq khwab behtar hota he _ haq tala ka irshad he

(tarjama kya in logon ka khayal he k jinhon ne gunah kiya he ham in ko un logon jesa kar den ge jo eeman laye aur unhon ne nek kam kiye hen,jin ki zindagi aur maut barabar he , bura jo wo faisla karte hen ,aur boorhe logon ka khwab bachon k khwab se zyada sacha hota he aur aazad aurat ka khwab baandi k khwab se behtar hota he

tabeer bayan karne walon ko har aek shakhs k khwab me nek maratab ka khayal rakhna chahiye aur jab sahib e khwab se sawal kare aur paraganda alfaz ko sune to sab k aqal k qayas se durust kare alfaz ki taqdeem (pehle wale ) aur taakheer (bad wale) ko durust kare aur phir tabeer bayan kare aur qawi tar alfaz ko usool e tabeer me nigah kare _ agar meezan e kalam ko nigah rakhe to phir ghalati na hogi aur jo kuch bayan kare , rast (seedha) bayan kare _ kyon k mutaqaddimeen ahl e ilm ( pehle wale \ purane daur wale is ilm k mahir) isi tarha qayas karte the aur tabeer rast aur durust aati

اچھا خواب نعمتِ خدا وندی

حضورﷺ نے ارشاد فرمایا ” بشارتوں کے سوا کوئی چیز باقی نہیں رہی ۔ صحابہ نے عرض کیا ےیا رسولاللہ بشارتوں سے کیا مراد ہے آپ نے فرمایا سچا خواب ۔(صحیح بخاری عن ابی ھریرہ) بخاری ومسلم کی متفق علیہ حدیث ہے آنحضرت ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ سچا خواب نبوت کا چھیاسواں حصہ ہے ۔

اس حدیث شریف معلوم ہوا کہ سچا خواب رویائے صالحہ علوم نبوت کا ایک جزو ہے اور علم نبوت باقی ہے گو انبیاءکرام کی آمد کا سلسلہ موقوف ہوچکا دوسرے لفظوں میں سچا خواب علوم نبوی کا عکس ہے۔

خواب کی اقسام

امام محمد بن سیرین ارشاد فرماتے ہیں کہ خواب تین قسم کے ہوتے ہیں ۔

1- مبشرات خداوندی –

2- تخویفِ شیطان) شیطان کے زیرِ اثر ) –

3- حدیثِ نفس یعنی ذہنی اور دماغی خیلات کا عکس –

اس تقسیم سے ظاہر ہوتا ہے کہ خواب کے تمام اقسام صحیح قابلِ تعبیر اوردر خوراعتناء نہیں ہوتے تعبیر اور اعتبار کے لائق وہی خواب ہوتے ہیں جو حق تعالیٰ کی طرف سے بشارت اور اعلام پر مبنی ہوں۔

علم تعبیر کے چھ مشہور امام
-علم تعبیر میں درج ذیل چھ آئمہ کرام کے اقوال کے بطور سند پیش کیا جاتا ہے
حضرت دانیال علیہ اسلام
حضرت امام جعفر صادق رضی اللہ تعالیٰ علیہ
حضرت امام محمد بن سرین رحمتہ اللہ علیہ
حضرت امام جابر مغربی رضی اللہ تعالیٰ علیہ
حضرت امام ابراہیم کرمانی علیہ رحمتہ اللہ علیہ
حضرت امام اسمعیل بن شوکت رحمتہ اللہ علیہ
تعبیر بیان کرنے کیلئے ضروری علوم
۔علم تفسیرعلم ضرب الامثالعلم حدیثاشعار عربعلم اشتقاق (صرف)نوادرعلم الغاتعلم الفاظ متد اَولہچنانچہ ایسے علماء ہے تعبیر بیان کرنے کے اہل ہیں جو ان علوم کے ماہر اور متقی پرہیزگار ہوں ۔
الوسوم

اترك تعليقاً

لن يتم نشر عنوان بريدك الإلكتروني. الحقول الإلزامية مشار إليها بـ *

شاهد أيضاً
إغلاق
زر الذهاب إلى الأعلى
إغلاق
إغلاق