ی

khwab ki tabeer khwab main yasmeen chanbeli dekhna

khwab ki tabeer khwab main yasmeen chanbeli dekhna

khwab ki tabeer khwab main yasmeen chanbeli dekhna

khwab ki tabeer khwab main yasmeen chanbeli dekhna

khwab ki tabeer khwab main yasmeen chanbeli dekhna

definición de visiones y sueños en términos de la

interpretación del lenguaje de los sueños de ibn sirin

las visiones son para reunir una visión y pueden ser

pronunciadas sin énfasis en el peso real. es en el lenguaje

que ve en el sueño derivado khwab main yasmeen dekhne ki tabeer

del acto de rai. originalmente es una fuente como la izquierda.

y cuando hice mi nombre para lo que el soñador había

, hice una transmisión khwab main yasmeen dekhne ki tabeer

los nombres y la visión de la percepción de distracción del

khwab ki tabeer khwab main yasmeen chanbeli dekhna

sentido de la vista. se dice de muchas de sus visiones: (ver).
y el sueño de combinar h e inmovilizar el lam. está permitido

incluirlos y decir: el sueño se deriva del sueño del sueño y

su significado khwab main yasmeen dekhne ki tabeer

quien ve en su sueño una visión. se dice: un sueño de

que vio en su sueño y el sueño de un sueño y su significado

de ver en el sueño de una visión se dice khwab main yasmeen dekhne ki tabeer

un sueño sobre el tema de cualquier opinión en el sueño y

khwab ki tabeer khwab main yasmeen chanbeli dekhna

sueño de cualquier opinión sobre la visión y la combinación:

los sueños preguntan aquí cuántas veces recibieron la palabra sueños en el corán
esta palabra fue repetida en el corán dos veces: interpretación de los sueños de ibn sirin

1 – qulat ta’ali (dijeron sueños y sueños y lo que estamos interpretando

sueños con dos mundos) [yusuf: 44] 2 – qala ta’ali khwab main yasmeen dekhne ki tabeer

(los profetas dijeron: 5) y el primer versículo concerniente a

josé con el rey. y el segundo en la historia de la ironía de

los idólatras árabes muhammad la paz sea con él (1)
la paz sea con él . interpretación de los sueños de ibn sirin

también preguntamos con qué frecuencia la palabra revelación entró en el corán.
la palabra de apocalipsis fue mencionada en el corán (cuatro veces

como sigue: interpretación de los sueños de ibn sirin)

اچھا خواب نعمتِ خدا وندی

حضورﷺ نے ارشاد فرمایا ” بشارتوں کے سوا کوئی چیز باقی نہیں رہی ۔ صحابہ نے عرض کیا ےیا رسولاللہ بشارتوں سے کیا مراد ہے آپ نے فرمایا سچا خواب ۔(صحیح بخاری عن ابی ھریرہ) بخاری ومسلم کی متفق علیہ حدیث ہے آنحضرت ﷺ نے ارشاد فرمایا کہ سچا خواب نبوت کا چھیاسواں حصہ ہے ۔

اس حدیث شریف معلوم ہوا کہ سچا خواب رویائے صالحہ علوم نبوت کا ایک جزو ہے اور علم نبوت باقی ہے گو انبیاءکرام کی آمد کا سلسلہ موقوف ہوچکا دوسرے لفظوں میں سچا خواب علوم نبوی کا عکس ہے۔

خواب کی اقسام

امام محمد بن سیرین ارشاد فرماتے ہیں کہ خواب تین قسم کے ہوتے ہیں ۔

1- مبشرات خداوندی –

2- تخویفِ شیطان) شیطان کے زیرِ اثر ) –

3- حدیثِ نفس یعنی ذہنی اور دماغی خیلات کا عکس –

اس تقسیم سے ظاہر ہوتا ہے کہ خواب کے تمام اقسام صحیح قابلِ تعبیر اوردر خوراعتناء نہیں ہوتے تعبیر اور اعتبار کے لائق وہی خواب ہوتے ہیں جو حق تعالیٰ کی طرف سے بشارت اور اعلام پر مبنی ہوں۔

علم تعبیر کے چھ مشہور امام
-علم تعبیر میں درج ذیل چھ آئمہ کرام کے اقوال کے بطور سند پیش کیا جاتا ہے
حضرت دانیال علیہ اسلام
حضرت امام جعفر صادق رضی اللہ تعالیٰ علیہ
حضرت امام محمد بن سرین رحمتہ اللہ علیہ
حضرت امام جابر مغربی رضی اللہ تعالیٰ علیہ
حضرت امام ابراہیم کرمانی علیہ رحمتہ اللہ علیہ
حضرت امام اسمعیل بن شوکت رحمتہ اللہ علیہ
تعبیر بیان کرنے کیلئے ضروری علوم
۔علم تفسیرعلم ضرب الامثالعلم حدیثاشعار عربعلم اشتقاق (صرف)نوادرعلم الغاتعلم الفاظ متد اَولہچنانچہ ایسے علماء ہے تعبیر بیان کرنے کے اہل ہیں جو ان علوم کے ماہر اور متقی پرہیزگار ہوں ۔
Tags

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button
Close